Main Sliderشوبز

چاکلیٹی ہیرو، وحید مراد کو مداحوں سے بچھڑے 35 برس بیت گئے

نستعلیق ویب ڈیسک: پاکستان فلم انڈسٹری کے مایہ ناز اداکار وحید مراد 23 نومبر 1983 کو بھری جوانی میں خالق حقیقی سے جا ملے تھے۔

ستر کی دہائی کےمایہ ناز اداکار، پروڈوسر اور سکرپٹ رائٹر وحید مراد 2 اکتوبر 1938 کو سیالکوٹ میں پید اہوئے۔ انہوں نے کراچی یونیورسٹی سے انگریزی میں ایم اے کیا۔ وحید مراد منہ میں سونے کا چمچ لے کر پیدا ہوئے .وہ شہرہ افاق فلم ڈسٹری بیوٹر نثار علی خان کے اکلوتے بیٹے تھے۔

وحید مراد نے 1962 میں پہلی فلم اولاد میں سپورٹنگ کریکٹر کیا۔ فلم اولاد نے بلاک بسٹر کامیابی حاصل کی جس میں وحید مراد کی اداکاری کو بے حد سراہا گیا۔وحید مراد کی فلموں میں شبانہ، نصیب اپنا اپنا، بہارو پھول برساو، راجہ کی آئے گی برات، ضمیر، بدنام، گن مین، کرن اور کلی، آہٹ اور مانگ میری بھر دو سر فہرست ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: معروف شاعرہ اور ادیبہ فہمیدہ ریاض انتقال کر گئیں

وحید مراد اپنی زندگی کے آخری دنوں میں ڈپریشن کا شکار ہو گئے تھے ، بالآخر پاکستان فلم انڈسٹر کا یہ ستارہ 23 نومبر1983 کو ڈوب گیا۔ ان کی فنی خدمات کو خراج تحسین پیش کرتے ہو انہیں ستارہ امتیاز، لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈ، نگار ایوارڈ اور بیسٹ ایکٹر جیسے بے شمار ایوارڈز سے نوازا گیا۔

Tags
Show More

مزید پڑھیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Close
Close