Main Sliderکاروباری

آئی ایم ایف کے نئے مطالبے، حکومت عوام پر مزید بوجھ لادنے کو تیار

نستعلیق ویب ڈیسک: آئی ایم ایف کے نئے مطالبے سامنے آ گئے۔ بجلی مزید مہنگی ہو گی۔ آئی ایم ایف نے سبسڈی ختم کرنے کی تجویز دے دی۔ ذرائع کے مطابق پاکستان سے توانائی مذاکرات میں آئی ایم ایف نے نیا ایجنڈا پیش کر دیا۔

بجلی کے بلوں کی مکمل وصولی کو یقینی بنانے کا مطالبہ بھی کیا گیا ہے۔ آئی ایم ایف نے شکوہ کیا کہ گزشتہ حکومت نے اصلاحاتی پروگرام پر عمل نہیں کیا۔

یہ بھی پڑھیں: پاکستانی حکومت نے شرائط نہ مانیں تو قرض نہیں دیا جائیگا، آئی ایم ایف

تفصیلات کے مطابق پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان توانائی مذاکرات کا سلسلہ ہوا۔ آئی ایم ایف وفد اور پاور ڈوژن حکام کے درمیان مذکرات کا پہلا مرحلہ طے ہوا۔ توانائی اصلاحات پر آئی ایم ایف کا عدم اعتماد دیکھنے میں آیا۔

آئی ایم ایف حکام نے کہا کہ پاکستان سے 14 نکاتی اصلاحاتی پروگرام پر اتفاق ہوا تھا۔ گزشتہ حکومت نے 14 نکاتی اصلاحاتی پروگرام پر عمل درآمد نہ کیا۔

پڑھنا نہ بھولیں: ملکی برآمدات بڑھانے کیلئے وزیر اعظم کا بڑا فیصلہ سامنے آ گیا

ذرائع کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف وفد کی جانب سے اصلاحات پر نیا ایجنڈا پیش کردیا گیا۔ آئی ایم ایف کا مطالبہ ہے کہ بجلی کے بلوں کی مکمل وصولی کی جائے۔ حکومت پاکستان بجلی کے نقصانات کم کرنے کے لیے اقدامات کرے۔ وفد میں شامل حکام نے بجلی تقسیم میں اصلاحات کر کے سبسڈی کو ختم کرنے کی تجاویز بھی دیں۔

وزارت توانائی حکام نے وفد کو بریفنگ دی۔ حکام کی جانب سے ٹیرف، ریکوری اور لاسز پر بریفنگ دی گئی۔ بریفنگ میں پاور سیکٹر کے گردشی قرضوں کی تفصیلات پیش کی گئیں۔

Tags
Show More

مزید پڑھیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Close
Close