فیچر

"نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام” خواب سے حقیقت تک

تحریر: احمد علی کیف

اپنا گھر اپنی چھت ہر شہری کا خواب ہے ، پاکستان جیسے ترقی پذیر ملک میں اپنے گھر کی تعمیر لاکھوں ملازمت پیشہ اور چھوٹے کاروبار سے منسلک افراد کے لیے انتہائی مشکل ہے، اپنی جنت کے خواب کی تکمیل کے لیے حکومت کا منصوبہ ہے آسان شرائط پر یہ گھر تعمیر کیا جائے ، دو بیڈ رومز اور ڈرائنگ ڈائنگ پر محیط اس گھر کی تعمیر کے لیے شہریوں کو ، 5 سے 10ہزار، 10 سے 15ہزار، 15 سے 20ہزار ماہانہ کا پلان دیا جائے گا، گھر کے لیے جگہ کے انتخاب کی سہولت بھی حاصل ہو گی ، نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کو رجسٹریشن مرحلے میں ہی عوام کی شاندار پذیرائی مل گئی ۔پہلے مرحلے میں سات اضلاع میں رجسٹریشن کا آغاز کیا گیا ۔ ۔پروگرام لانچ ہوتےہی2 لاکھ افرادنےبیک وقت نادراویب سائٹ پررسائی حاصل کی۔

وزیر اعظم پاکستان عمران خان کے نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کے پہلے رجسٹریشن مرحلے میں عوام کی طرف سے شاندار پذیرائی دیکھنے کو ملی۔ رجسٹریشن مرحلہ سات اضلاع اسلام باد، کوئٹہ، گلگت، مظفرآباد، سوات، فیصل آباد اور سکھر میں شروع کیا گیا ہے۔ اس سلسلے میں  رجسٹریشن فارم نادرا کی ویب سائٹ پر جاری کیے گئے۔ اب تک ایک لاکھ پچیس ہزار فارم ڈاون لوڈ کیے جا چکے ہیں۔

پروگرام لانچ ہوتے ہی دنیا بھر سے بیک وقت 2 لاکھ افراد نے نادرا ویب سائیٹ پر رسائی حاصل کی اور ایک سیکنڈ میں دس ہزار ہِٹس موصول ہوئیں۔۔۔ پہلے ہی گھنٹہ میں 62 ہزار فارم ڈاؤن لوڈ ہوئے جس کی وجہ سے نادرا کی ویب سائٹ پر غیر معمولی دباؤ آنے کی وجہ سے ویب سائیٹ متاثر ہوئی جسے فوری طور پر بحال کیا گیا۔ نادرا فارم کی کوئی فیس نہیں ہے، فارم جمع کرواتےوقت 250 روپے بمع رجسٹریشن فارم مختص کردہ نادرا دفاتر میں جمع ہوں گے جبکہ 22اکتوبر کو فارم وصولی کا آغاز تمام اضلاع سے کیا جائےگا ۔

وزیراعظم عمران خان کے نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کے تحت ابتدائی طور پر ہر طبقے کے لوگوں کو فوری طور پر رہائشی سہولیات میسر آ سکیں گی۔  عوام کے لیے اپنا گھر اسکیم مناسب قیمت اور آسان اقساط پر بہترین رہائش،  بجلی گیس و پانی کی سہولیات،  تمام ضروریات زندگی سے آراستہ اعلٰی معیار کا تعمیراتی مواد ، اور بہترین ماحول کی ضمانت ہو گا۔

Tags
Show More

مزید پڑھیں

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

Close
Close